1,163

ڈرامہ ’’میرے پاس تم ہو‘‘کے کردار دانش کو عدالت عالیہ نے طلب کر لیا، کیا سنگین الزام عائد کیا گیا؟

اسلام آباد(نیوزڈیسک)عدالت نے ڈرامہ “میرے پاس تم ہو” کے مرکزی کردار ہمایوں سعید کو ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا۔سندھ ہائیکورٹ میں ڈرامہ سیریل “میرے پاس تم ہو” کی آخری قسط کے خلاف درخواست دائر کی گئی جس میں وفاقی حکومت، پیمرا و دیگر کو فریق بنایا گیا۔درخواست ثناء سلیم نے مؤقف اختیار کیا کہ ڈرامے میں عورت کی کردار کشی کی گئی، ڈرامے میں پاکستانی عورت کا دنیا بھر میں منفی تاثر دیا گیا، ایک چھ سالہ بچے اپنی اسکول ٹیچر سے اپنے باپ کا رشتہ کرا رہا ہے، ڈرامے میں دیکھایا گیا کہ نکاح کے بغیر دو لوگ ایک ساتھ رہے رہیں ہیں۔درخواست گزار نے کہا کہ ہم عدالت میں صرف اس لیے آئیں ہیں کہ پیمرا کو ہدایات دی جائیں، جس پر عدالت نے کہا کہ ہم ہدایت نہیں عمل کروائیں گے اگر غیر اخلاقی جملے استعمال کیے گئے ہوں تو۔عدالت نے وکیل پیمرا اسے استفسار کیا کہ ڈرامہ مانیٹرنگ کا کوئی طریقہ ہے، ان ہاؤس کوئی سینسر ہے آپ کے پاس؟۔وکیل پیمرا نے کہا کہ ہماری پالیسی ہے کہ ڈرامے کے اندر زبان اور منظر نگاری اخلاق کے دائرے میں ہونے چاہئیں، ہمارے پاس ان چیزوں کو دیکھنے کے لیے فورم بنا ہوا ہے۔عدالت نے وکیل درخواست گزار سے استفسار کیا کہ کیا آپ کو آخری قسط میں کوئی اعتراض ہے جس پر وکیل درخواستگزار منیر گلال نے کہا کہ نہیں ہمیں آخری قسط سے کوئی اعتراض نہیں ہے۔وکیل منیر گلال نے کہا کہ دو ٹکے کی لڑکی کا ڈائیلاگ استعمال کیا گیا، یہ ڈائیلاگ بہت مشہور ہوگیا ہے، ڈرامے میں کراچی کی امیج بھی خراب دیکھایا گیا، کہا گیا کہ کراچی میں 30 ہزار میں لوگ مارے جاتے ہیں۔درخواست گزار نے استدا کی کہ ڈرامہ کے رائٹر اور پروڈیوسر کو حکم دیا جائے کہ عوام سے معافی مانگیں۔جسٹس محمد علی مظہر نے کہا کہ پہلے دیکھنا ہوگا کہ کیا ڈرامے میں ایسے ایسے اعتراض والی گفتگو کی گئی ہے کہ نہیں۔عدالت نے ڈرامہ میں ڈائیلاگ کہنے والے اداکار ہمایوں سعید کو ذاتی حیثیت میں طلب کرتے ہوئے پیمر اور دیگر فریقین سے جواب طلب کرلیا۔کیس کی مزید سماعت 13 فروری تک ملتوی کردی گئی۔یاد اس سے قبل لاہور سول کورٹ میں ماہم جمشید نامی درخواست گزار نے ڈرامہ “میرے پاس تم ہو” کی آخری قسط پر حکم امتناعی جاری کرنے کی استدعا کی گئی تھی جسے عدالت نے مسترد کر دی تھی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں